ہٹیاں بالا جنسی اسکینڈل میں تہلکہ خیز انکشافات،واقعہ میں ایک اور لڑکی بھی ملوث نکلی،ملزمہ کون ہے؟ 252

ہٹیاں بالا جنسی اسکینڈل میں تہلکہ خیز انکشافات،واقعہ میں ایک اور لڑکی بھی ملوث نکلی،ملزمہ کون ہے؟

ہٹیاں بالا / چکار ( چنارنیوز) ہٹیاں بالا کے نواحی علاقے دھنی شاہدرہ شادی شدہ خاتون مسماة ( ح ) کا خاوند اور سوتن کی ایما پر زبردستی جنسی سکینڈل لیک ! خاوند آفتاب اور سوتن لبنی زبردستی رفاقت اور راشد سے زناکاری کرواتے رہے ! دھنی شاہدرہ کی خاتون ( ح) نے 2/3 ماہ سے گھر میں جاری زناکاری اور جسمانی تشدد کا پردہ چاک کردیا ۔ جنسی درندگی کا نشانہ بننے والی شادی شدہ خاتون ( ح ) سٹی تھانہ ہٹیاں بالا پہنچ گی ۔ ایس ایچ او سٹی راجہ یاسر علیخان نے ساٸلہ کی درخواست پر کارروائی کرتے ہوۓ جنسی درندگی میں ملوث ملزمان , سوتن اور خاوند آفتاب ولد مزمل دین سکنہ دھنی شاہدرہ کے خلاف ساٸلہ ( ح) کی مدعیت میں زناکاری کی مختلف دفعات پر مبنی مقدمہ درج کرلیا ہے ۔پولیس کے اعلی حکام اور ایس ایچ او سٹی کی ہدایت کی روشنی میں اے ایس آٸ چودھری نوید الحسن , امجد خان , ثاقب وقار خان اور ممتاز اعوان پر مشتمل ٹیم نے مقدمے کے اندراج کےچند گھنٹوں کے اندر آفتاب , راشد اور رفاقت اور لبنی مقدمے کے مرکزی ملزمان کو گرفتار کرلیا ہے ۔ جنسی اور جسمانی تشدد کا نشانہ بننے والی خاتون کا ڈی ایچ کیو اسپتال ہٹیاں بالا میں میڈیکل کروایا جارہا ہے ۔ جنسی سکینڈل لیکس پرعوامی حلقوں میں تشویش پاٸ جاتی ہے ۔ وزیراعظم آزادکشمیر نے اپنے حلقہ انتخاب میں جنسی سکینڈل کےاس افسوسناک واقع کا فوری نوٹس لیتے ہوۓ پولیس کےاعلی حکام کوکیس کی غیر جاندارانہ تحقیقات کے احکامات صادر کردیے ہیں۔ جنسی درندگی اور جسمانی تشدد کا نشانہ بننے والی خاتون ( ح) زوجہ آفتاب نے سٹی تھانہ ہٹیاں بالا میں مقدمہ کے اندراج کے لیے اپنے تحریری بیان میں موقف اختیار کیا ہے کہ میں باٹ بنی کی سکونتی ہوں سن 2011 میں میرے دھنی شاہدرہ کے رہائشی آفتاب ولد مزمل حسین سے دوستی ہوٸ اور بعد ازاں میری شادی سربن کے سلیم نامی شخص سے ہوٸ اور آفتاب کیوجہ سے سن 2014 میں سلیم نے مجھے طلاق دے دی ۔ آفتاب ولد مزمل نے مجھ سے شادی کرنے کاجھانسہ دیکر مہر کیرقم پچاس ہزار روپے تین تولے طلاٸ زیورات لیے اور دوبار آفتاب کے ہی کہنے پر میں نے مظفرآباد کے رہائشی عارف سے شادی کرلی اورشادیکا جھانسہ دیکر کہا اس سے طلاق لو میں خود شادی کروں گا ۔ میرے شوہر عارف کو فون کرکے کہا میرے اسکے ناجائز تعلقات ہیں جس پر میرے سابقہ خاوند نے مجھے مارنا پیٹنا شروع کر دیا اور مجھے والدین کے گھر چھوڑ کر چلاگیا ۔ بعد میں آفتاب نے مجھے عدالت لیجا کر طلاق دلواٸ اور ساٸلہ کے زیورات لیکر پانچ لاکھ روپے کی ڈگری پر دستخط اور انگوٹھے لگوا لیے ۔ آفتاب نے 5 جنوری 2019 کومیرے ساتھ نکاح کیا اور مجھے راولپنڈی لیے گیا . جہاں میری سوتن لبنی جو میرے خاوند آفتاب کی پہلی بیوی ہے اور آفتاب مجھے کمرے میں لے گیا انکے ساتھ رفاقت اور راشد بھی تھے ۔ مجھے باندھ کر مار پیٹا اور دھمکایا میرے خاوند نے آپکو اپنے لیے نہیں بلکے رفاقت اور راشد کے لیے لایا ہے میری سوتن اور خاوند نے زبردستی میرے کپڑے اتار کر بیڈ کے ساتھ باندھ دیا پہلے خود بعدازاں رفاقت اور راشد سے زناکاری کرواٸ اور سوتن لبنی نے بلیک میل کرنے کے لیے میری برہنہ تصویریں بنائيں ۔ تین ماہ تک میرا خاوند رفاقت اور راشد سے میرے ساتھ زناکاری کرواتا رہا میں اپنے خاوند کی منت سماجت کرتی رہی کہ ایسا نہ کرو میں آپکی عزت ہوں لیکن وہ اپنی گھٹیا حرکت سے باز نہیں آیا اور مجھے کہتا اگر شور شرابا کیا تو تصویریں نیٹ پر ڈال دوں گا ۔3مٸی کو لبنی اور میرے خاوند نے پاٸپ کے ساتھ جسمانی تشدد کا نشانہ بنایا کھڑکی سے چھلانگ لگا کر بھاگ کر جان بچاٸ میری جان کو شدید خطرات ہیں مجھے تحفظ فراہم کرکے میرے ساتھ ہونے والی جنسی درندگی کے شرمناک فعل اور جسمانی تشدد کی تحقیقات کرکے انصاف دلایا جاۓ ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں